تعارف 2018-05-10T14:54:52+00:00

جامعہ حنیفیہ
طلب العلم فریضةعلیٰ کل مسلم،،

اس فرض کی ادائیگی کیلئے 1983 ء میں کراچی کے علاقے سعودآبادملیر کی فاروقی مسجد میں جناب محمد رضی خان صاحب کے تعاون سے جامعہ حنیفیہ کا قیام عمل میںآیا ۔جامعہ کانصب العین طالبان علوم نبوت کو انتہائی پاکیزہ ماحول میں دینی تربیت کے ساتھ ساتھ اعلیٰ تعلیم فراہم کرنا تاکہ ایسے علماء حق تیار ہوں جو رضائے الٰہی کو اپنا نصب العین سمجھیں اور قرآن وسنت سے ہدایات کی روشنی پاکر امت مسلمہ کو فروعی اختلافات کے اندھیرے سے نکالیں اور اسلام کی نشأة ثانیہ میں ہر اول دستہ کا کردار ادا کر سکیں۔
جامعہ حنیفیہ ” انجمن تعلیم اسلامی ٹرسٹ” جو اپنے قیامسے لے کر اب تک فروغ علم اور اشاعت دین کے میدان میں عازم سفر ہے اور الحمدللہ اب تک سینکڑوں فضلاء اور حفاظ سندفراغت حاصل کر کے معاشرے میں اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں۔جامعہ حنیفیہ میں فی الوقت اللہ کے فضل وکرم سے درج ذیل شعبوں میں درس وتدریس اور تعلیم وتعلم کے فرائض انجام دیئے جارہے ہیں۔

مزید پڑھیں

مستقبل کے منصوبے

شعبہ تجوید وقرأت

اس بات کی اشد ضرورت محسوس کی جارہی ہے کہ طلباء میں تجوید وقرأت کی صلاحیت بھی پیدا کی جائے اور ان کی صلاحیتوں کو پروان چڑھایا جائے۔تاکہ تحریکی حلقوں کو خصوصاً اور عمومی طور اچھے قرأ ء میسر آسکیں۔

شعبہ تخصص کا اجرائ

جامعہ میں جگہ کی تنگی کی وجہ سے یہ شعبہ فی الحال بند ہے۔جبکہ شعبہ تخصص نہایت اہم اور ضروری شعبہ ہے۔

مکاتب کے قیام میں مزید اضافہ

اندرون سندھ میں انشاء اللہ مزید 10 مکاتب قائم کرنے کا منصوبہ ہے۔

دارالافتاء کا قیام

روزانہ عوام الناس کی ایک کثیر تعداد اپنے شرعی مسائل معلوم کرنے کیلئے جامعہ کی طرف رجوع کرتے ہیں۔جامعہ کے اساتذہ بڑے محنت سے انکے مسائل حل کرتے ہیں لیکن افسوس جگہ کی کمی کی وجہ سے مستقل دارالافتاء موجود نہیں۔اس لیے ضرورت ہے کہ تمام سہولیات پر مشتمل ایک دارالافتاء قائم کیا جائے۔

توسیع دارالاقامہ(ہاسٹل)

جامعہ میں طلباء کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے ۔مہمانانِ رسول ۖ کیلئے رہائش کی تنگی ہے ۔طلباء بیچارے کلاسوں میں سوتے ہیں اس لیے مزید 15 کمرے دارالاقامہ کی تعمیر ہو تاکہ طلباء بسہولت اس میں رہائش اختیار سکیں۔

توسیع دارالتدریس

تدریسی عمل کومزید بہتر کرنے اور طلبہ کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے مزید کمروں کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔